Presmurdu - Pakistani Urdu Forum | urdu shayari | Urdu Islam | Design Urdu PoetryLog in

Share

descriptiondefaultحدیث : 1365

more_horiz
حضرت عمرو رضی اللہ عنہ نے کہا کہ میں نے جابر بن عبداللہ (رضی اللہ عنہ) سے سنا ، انہوں نے کہا کہ :
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم تشریف لائے تو عبداللہ بن ابی (منافق) کو اس کی قبر میں ڈالا جا چکا تھا۔ لیکن آپ (صلی اللہ علیہ وسلم) کے ارشاد پر اسے قبر سے نکال لیا گیا۔ پھر آپ (صلی اللہ علیہ وسلم) نے اسے اپنے گھٹنوں پر رکھ کر لعاب دہن اس کے منہ میں ڈالا اور اپنا کرتا اسے پہنایا۔ اب اللہ ہی بہتر جانتا ہے۔
(غالباً مرنے کے بعد ایک منافق کے ساتھ اس احسان کی وجہ یہ تھی کہ) انہوں نے حضرت عباس (رضی اللہ عنہ) کو ایک قمیص پہنائی تھی (غزوۂ بدر میں جب حضرت عباس رضی اللہ عنہ مسلمانوں کے قیدی بن کر آئے تھے)۔ سفیان نے بیان کیا کہ ابو ہارون موسیٰ بن ابی عیسیٰ کہتے تھے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے استعمال میں دو کرتے تھے۔ عبداللہ کے لڑکے (جو مومن مخلص تھے رضی اللہ عنہ) نے کہا : یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ! میرے والد کو آپ وہ قمیص پہنا دیجئے جو آپ کے جسد اطہر کے قریب رہتی ہے۔
سفیان نے کہا کہ لوگ سمجھتے ہیں کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنا کرتا اس کے کرتے کے بدل پہنا دیا جو اس نے حضرت عباس رضی اللہ عنہ کو پہنایا تھا۔
صحيح بخاري
كتاب الجنائز
باب : هل يخرج الميت من القبر واللحد لعلة
حدیث : 1365
عربی متن : http://www.al-eman.com/hadeeth/viewchp.asp?BID=13&CID=47&SW=1365#SR1

descriptiondefaultRe: حدیث : 1365

more_horiz
very nice sharing mahbob saheb thankss


descriptiondefaultRe: حدیث : 1365

more_horiz
nice dear

clicked on thanks.

descriptiondefaultRe: حدیث : 1365

more_horiz
nice dear.........

descriptiondefaultRe: حدیث : 1365

more_horiz
Permissions in this forum:
You cannot reply to topics in this forum